Epaper Editions
نرملا سیتارمن نے ٹویٹر پر ملی کاروباری کی شکایت پر کی کارروائی
 16
14 Feb, 2020 02:03 pm

 

نئی دہلی: مرکزی حکومت ملک کی ریڑھ کی ہڈی ماننے والے کاروباریوں کے لئے نہ صرف منصوبے بنا رہی ہے بلکہ مشکل وقت میں ان کے مسائل کے حل کےلئے بھی کوشاں ہے۔ اس کی ایک بہترین مثال مرکزی وزیر خزانہ نرملا سیتارمن نے تب پیش کی جب ان کے ٹویٹر پر بینک سے پریشان ایک کاروباری نے اپنی شکایت درج کی۔ چھوٹے اور درمیانے کاروبار کو چلانے والے سنجے پٹیل نے سینٹرل بینک آف انڈیا کے سلسلے میں وزیر خزانہ کو ان کے ٹویٹر پر ٹیگ کرکے اپنی پریشانی ظاہر کی تھی۔ سنجے پٹیل کی شکایت ہے کہ اس نے سینٹرل بینک آف انڈیا سے قرض لیاتھا اور اس قرض کو وہ چار ماہ پہلے ہی ادا کرچکا ہے۔ سنجے پٹیل نے 13فروری کو اپنے ٹویٹ میں لکھا،’میری چھوٹے اور درمیانے شعبہ کی کمپنی ہے، کاروبار کو مشکل حالات میں چلاتے رہنے کی وجہ سے ہم نے اپنی ذاتی جائیداد بیچ دی۔ سینٹرل بینک آف انڈیا سے ہم نے قرض لیاتھا اور اس قرض کو ہم چار ماہ پہلے ہی ادا کرچکے ہیں، اس کے باوجود وہ ہمارے گھر کے دستاویز واپس نہیں دے رہے ہیں۔ ہماری مدد کیجئے اور ہماری فیکٹری کی کافی قیمت ہے۔‘کاروباری کی اس مشکل پر وزیرط خزانہ سیتارمن نے ٹویٹر پر لکھا،’یہ جان کر دکھ ہوا، وزارت خزانہ اس معاملے میں آپ سے رابطہ کرےگی۔‘واضح رہے کہ آنجہانی وزیر خارجہ سشما سوراج بھی کئی بار غیر ملکوں میں رہنے والے غیر مقیم ہندوستانیوں کی ٹویٹر پر شکایت ملنے پر فوری طورپر قدم اٹھاتی تھیں۔ وزیر خارجہ ایس جے شنکر پرساد نے بھی کئی بار ٹویٹر پر غیر مقیم ہندوستانیوں کی پریشانیوں کی اطلاع ملنے کے بعد اس کے حل کےلئے قدم اٹھائےہیں۔
 

Original text