23:51:21
وقف بورڈ کے خالی پلاٹ پر محکمہ آثار قدیمہ کی قبضہ کی کوشش ناکام،قف بورڈ کی ٹیم نے اپنا بورڈلگایا
 139
13 Oct, 2020 06:52 pm

اوقاف کی زمین پر زمین مافیاؤں کے ساتھ ساتھ سرکاری محکموں کی بھی بری نظر رہتی ہے اور موقع ملتے ہی خالی پڑی وقف زمینوں پر سرکاری محکمے قبضہ کرنے کی تاک میں رہتے ہیں۔ایسا ہی ایک واقعے میں نظام الدین کے نیو ہرائزن پبلک اسکول کی بغل میں خالی پڑے وقف بورڈ کے پلاٹ پر محکمہ آثار قدیمہ نے چونا وغیرہ ڈالکر باؤنڈری کرنے کا مبینہ طور پر منصوبہ بنایا جسکی اطلاع ملتے ہی سیکشن آفیسر حافظ محفوظ محمد کی ہدایت پر وقف بورڈ کی ایک ٹیم موقع پر پہونچی اور پلاٹ کی انٹری اور پلاٹ کے بیچوں بیچ دفتر وقف بورڈ کے بورڈ لگادیئے۔
جاری ریلیز کے مطابق نیو ہرائزن اسکول کی بغل میں کئی بیگھہ پر مشتمل قیمتی اراضی ہے جسکی کچھ زمین نیو ہرازن اسکول میں آرہی ہے جبکہ باقی پلاٹ خالی پڑا ہے۔اچانک ہی محکمہ آثار قدیمہ نے خالی پڑے پلاٹ کے چاروں طرف چونے سے نشان زد کرکے چہار دیواری کرانے کے مقصد سے کارروائی شروع کردی جسکی اطلاع اسکول انتظامیہ نے دفتر وقف بورڈ کو دی جس کے بعد وقف بورڈ سے ایک سات رکنی ٹیم نے موقع کا معائنہ کیا جس میں جونیئر انجینئر عثمان بخاری،محمد فرہاد،محمد عزیر خان،شاہ زیب حسن،شعیب،شاہد کمال اور خرم کے نام شامل ہیں۔وقف بورڈ کی ٹیم نے ایک بورڈ پلاٹ کے داخلی دروازہ پر جبکہ دوسرا پلاٹ کے بیچوں بیچ لگادیا جس پر تحریر ہے کہ یہ زمین دہلی وقف بورڈ کی ملکیت ہے۔غور طلب ہے کہ مذکورہ پلاٹ خسرہ نمبر 533حکومت دہلی کے گزٹ 3مارچ 1994کے مطابق گزٹ نوٹیفائڈ وقف پراپرٹی ہے  جو سالوں سے خالی پڑی ہے۔زمین کا کل رقبہ پانچ بیگھہ سے زائد ہے جبکہ کچھ حصہ نیوہرائزن اسکول کے احاطہ کے اندر آگیا ہے جبکہ باقی پلاٹ خالی پرا ہے۔اس پورے معاملہ سے متعلق وقف بورڈ کے سیکشن آفیسر حافظ محفوظ محمد نے بتایا کہ ہمیں اطلاع ملی تھی کہ محکمہ آثار قدیمہ نے غلط ارادہ سے پلاٹ کے چاروں جانب چونے سے نشاندہی کرائی ہے اور عنقریب پلاٹ کی چہار دیواری کرکے اس پر قبضہ کی کوشش کی جائے گی۔
انہوں نے مزید بتایا کہ معاملہ کی حساسیت کو دیکھتے ہوئے ہم نے وقف بورڈ کے آفیسروں پر مشتمل ایک ٹیم فورا موقع معائنہ کے لئے روانہ کی۔ٹیم نے شکایت صحیح پائی اور واقعی پلاٹ کے چاروں جانب غلط منشاء سے چونے سے نشاندہی کی گئی تھی۔انہوں نے آگے کہاکہ وقف کی زمین پر کسی حال میں قبضہ نہیں ہونے دیا جائے گا اور ایسی کسی بھی کوشش کو ناکام بنادیا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ ماضی میں بھی اس طرح کی کوششیں ہوتی رہی ہیں تاہم بروقت کارروائی سے انھیں ناکام بنادیا گیا ہے۔حافظ محفوظ محمد نے لوگوں سے بھی اپیل کرتے ہوئے کہاکہ اگر اوقاف کی زمینوں پر دہلی میں کہیں قبضہ کی کوشش ہوتی دیکھیں تو اس سے فورا دفتر دہلی وقف بورڈ کو مطلع کریں تاکہ بروقت کارروائی سے ایسی کوششوں کو ناکام کیا جاسکے۔

Original text