Epaper Editions
انورادھا پوڈوال کو45 سالہ خاتون نے بتایا اپنی والدہ، 50 کروڑ کا ہرجانہ طلب
 203
03 Jan, 2020 02:11 pm

 

کیرلہ کی ایک 45 سالہ خاتون کرمالہ میڈیکس نے دعوی کیا ہے کہ انورادھا پوڈوال ہی اس کی اصل والدہ ہیں۔ اس خاتون نے اپنی پیدائش اور پالنے والے والدین کے تعلق سے کئی اہم خلاصہ کیے ہیں۔ کرمالہ میڈیکس نے اس کے ساتھ انورادھا پوڈوال سے 50 کروڑ روپے کا ہرجانہ کا مطالبہ کیا ہے۔
انورادھا پوڈوال کو اپنی والدہ بتانے والی کیرالہ کی اس خاتون نے انورادھا پر فیملی کورٹ میں کیس دائر کر دیا ہے اور 50 کروڑ روپے کا ہرجانہ بھی مانگا ہے۔ 
میڈیا رپورٹس کے مطابق کرمالہ کا کہنا ہے کہ اس کی پیدائش سال 1674 میں ہوئی تھی اور جب وہ صرف چار روز کی تھی اس وقت انورادھا نے ان کو پوناچن اور اگنیس جوڑے کو سونپ دیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ یہ دونوں انورادھا کے قریبی دوست تھے۔ انورادھا کی بیٹی کا دعوی کرنے والی اس خاتون کی کئی تصویریں سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں۔
 اس پورے واقعہ کا خلاصہ ان کے پالنے والے والد نے اس وقت کیا تھا جب وہ اپنی آخری سانسیں لے رہی تھیں۔ 
کرمالہ نے یہ بھی بتایا کہ والد کے بتانے کے بعد انہوں نے کئی مرتبہ انورادھا سے فون پر رابطہ کرنے کی کوشش کی لیکن انہوں نے بات نہیں کی۔ اس  معاملہ میں انورادھا پوڈوال کی جانب سے کوئی رد عمل سامنے نہیں آیا ہے۔

Original text