23:51:21
دو ریاستوں کے درمیان سطحی سیاست کافی تکلیف دہ: مایاوتی

 71
22 May, 2020 05:41 pm

لکھنؤ: بہوجن سماج پارٹی(بی ایس پی) سپریمو مایاوتی نے راجستھان کانگریس حکومت کےذریعہ یوپی حکومت سے طلبہ کو گھر بھیجنے کے لئے 
خرچ ہوئے 36.36لاکھ روپئے کے مطالبے کو غیر انسانی بتاتے ہوئے کہا کہ دو پڑوسی ریاستوں کے درمیان ایسی سطحی سیاست کافی تکلیف دہ ہے۔
 مایاوتی نے جمعہ کو اپنے ٹوئٹ میں لکھا'راجستھان کی کانگریس حکومت کی جانب سے کوٹہ سے تقریبا 12ہزار طلبہ و طالبات کو واپس ان کے گھر بھیجنے پر 
خرچ کے طور پر یوپی حکومت سے 36.36لاکھ روپئے دینے کا مطالبہ کیا ہے جو کہ راجستھان حکومت کی دیوالیہ پن اور غیر انسانیت کو ظاہر کرتا ہے۔ دوپڑوسی 
ریاستوں کے درمیان ایسی سطحی سیاست کافی تکلیف دہ ہے۔ مایاوتی نے کہا'راجستھان حکومت ایک طرف کوٹہ سے یوپی کے بچوں کو اپنی کچھ بسوں سے واپس بھیجنے کے لئے من مانی رقم وصول کررہی ہے تو دوسری 
طرف اب مہاجر مزدوروں کو یوپی میں ان کے گھر بھیجنے کے لئے بسوں کی بات کر کے جو سیاسی کھیل کھیل رہی ہے وہ کتنا مناسب اور کتنا انسانیت نواز ہے؟۔


بی ایس پی سپریمو نے کہا کہ امفان طوفان کے قہر سے مغربی بنگال کو تباہی کا سامنا ہے۔ مرکزی حکومت کو آگے آکر ریاستی حکومت کو حالات کو معمول پر لانے کے 
لئے مدد کرنی چاہئے۔
 

Original text