23:51:21
دہلی اور این سی آر میں آلودگی اور کورونا کی دوہری مار
 116
23 Oct, 2020 10:38 am

نئی دہلی : قومی دارالحکومت کے موسم میں سردی کا اثربڑھنے کے ساتھ لوگوں کو دوگنی پریشانیوں سے دوچارہونا پڑرہا ہے۔ ایک طرف بڑھتی ہوئی آلودگی سے آب و ہوا روز بروز بدتر ہوتی جارہی ہے ،جب کہ کورونا وائرس (کووڈ۔ 19)کے کیسزمیں بھی گزشتہ کئی دنوں سے مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔
دہلی پولیوشن کنٹرول کمیٹی(ڈی پی سی سی)نے دارالحکومت کی آب و ہوا کا انڈیکس جمعہ کو جاری کیا  ہے جو انتہائی تشویشناک ہے۔ دہلی میں آج صبح سات بجے آلودگی کی سطح 360 ہے۔ آسمان میں دھواں ہے۔ یہ موسم سانس کی بیماریوں میں مبتلا لوگوں کے لئے بالکل بھی سازگار نہیں ہے۔
ڈی پی سی سی کے مطابق دہلی کی ہوا اب بھی’انتہائی  خراب‘کے زمرے میں ہے۔ دارالحکومت کا علی پور علاقہ 442 ایئرکوالٹی انڈیکس (اے کیو آئی)کے ساتھ  سب سے زیادہ آلودہ خطہ ہے ۔ روہنی میں 391،دوارکا میں 390،آنند وہارمیں 387 جب کہ آر کے پورم میں اے کیو آئی 333 ریکارڈ کیا گیا۔
دارالحکومت  کے قرب و جوارعلاقوں مثلاًغازی آباد میں اے کیو آئی 380،گریٹر نوئیڈا میں 377 اور نوئیڈا میں 380 ریکارڈ کیاگیا ۔ سنٹرل آلودگی کنٹرول بورڈ (سی پی سی بی)کے مطابق،آئی ٹی او میں پی ایم 2.5 کی سطح 356 ہے۔ جو’انتہائی بدترین زمرہ‘ہے۔
 دہلی میں جہاں دوسری جانب آلودگی کی سطح بڑھ رہی ہے،وہیں کوروناکیسز میں بھی اضافہ ہورہا ہے۔
 جمعرات کی شام کے اعداد و شمارکے مطابق کورونا وائرس کے 3882 نئے کیسزرپورٹ ہوئے اور 35 مریضوں کی موت ۔ اس عالمی وبا سے دارالحکومت میں متاثرہ افراد کی تعداد اب 344318 اور ہلاکتوں کی تعداد 6163 ہے۔ 25 ہزار 237  ایکٹیو کیسز ہیں۔

Original text