23:51:21
وشاکھا پٹنم جاسوسی معاملہ میں کلیدی ملزم گرفتار
 102
15 Sep, 2020 02:24 pm

نئی دہلی : قومی تفتیشی ایجنسی (این آئی اے)نے حیدرآباد میں درج وشاکھاپٹنم جاسوسی کیس کا  کلیدی ملزم گٹیلی عمران کو گرفتار کیا ہے۔
این آئی اے نے منگل کے روز بتایا کہ ملزم عمران کو پیر کے روز گرفتار کیا گیا تھا۔ اسے جاسوسی کی سرگرمیوں میں ملوث ہونے اور پاکستانی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کے لئے کام کرنے کے الزام میں تعزیرات ہند کی دفعہ 120 بی اور 121 اے ، یو اے (پی)ایکٹ کی دفعہ 17 اور 18 اور سرکاری راز ایکٹ کی دفعہ 3 کے تحت گرفتار کیا گیا ہے۔
ایجنسی نے پیر کے روز عمران کے گھر تلاشی لی اور کچھ ڈجیٹل سامان اور خفیہ دستاویز ضبط کیں۔ یہ کیس ایک بین الاقوامی جاسوسی ریکیٹ سے متعلق ہے جس میں پاکستان میں مقیم جاسوسوں نے ہندوستانی بحری جہازوں ، آبدوزوں اور دیگر دفاعی تنصیبات کے مقامات ، سرگرمیوں کے بارے میں حساس اورخفیہ معلومات جمع کرنے کے لئے ہندوستان میں ایجنٹوں کو بھرتی کیا تھا۔
این آئی اے کی تحقیقات سے انکشاف ہوا ہے کہ کچھ بحری عملہ فیس بک ، واٹس ایپ جیسے سوشل میڈیا پلیٹ فارم کے ذریعے پاکستانی ایجنٹوں کے رابطے میں آئے اورانہوں نے ہندوستان میں آئی ایس آئی کے ایجنٹوں  کے ذریعے خفیہ معلومات شیئر کیں۔ بدلے میں آئی ایس آئی نے اسے بھاری رقم ادا کی۔
تفتیشی ایجنسی نے رواں سال 15 جون کو 14 ملزمان کے خلاف چارج شیٹ دائر کی تھی۔اب تک کی تفتیش میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ گرفتار ملزم عمران سرحد کے اس پار ٹیکسٹائل کی تجارت کے لئے  پاکستانی جاسوسوں اور ایجنٹوں کے ساتھ جڑا ہوا  تھا۔ این آئی اے افسران  نے بتایا کہ پاکستان میں مقیم جاسوسوں کی ہدایت کے مطابق ، انہوں نے حساس اور انٹیلی جنس معلومات کے عوض بحریہ کے اہلکاروں کے بینک کھاتوں میں باقاعدہ وقفوں سے فنڈز جمع کروائے۔

Original text